جمیل احمد
August 31, 2021

طالب علم کیرئیر کا انتخاب کیسے کر سکتے ہیں؟ چند مفید مشورے

آج ہم طلبہ و طالبات کے ایک مشترک مسئلے پر بات کریں گے، اور وہ ہے کیریئر کا انتخاب کیسے کیا جائے۔بات کالج اور یونیورسٹی میں مضامین کا انتخاب کرنے کی ہو یا کوئی پیشہ اختیار کرنے کی،یہ سوال اکثر طلبہ و طالبات اور ان کے والدین کو الجھن میں مبتلا کر دیتا ہے کہ فیصلہ کیسے کیا جائے؟اگر آپ بھی کیرئیر کے بارے میں سوچ رہے ہیں، یا اپنے بچے کی رہنمائی کرنا چاہتے ہیں  تو یہ مضمون  آپ کے لیے ہے۔آج ہم ان سات طریقوں کی بات کریں گے ، جو کیرئیر کا انتخاب کرنے میں آپ کی مدد کریں گے۔

تو سب سے پہلے ہم یہ سمجھ لیتے ہیں کہ کیریئر پلاننگ  کے طریقوں کے بارے میں جاننا کیوں ضروری ہے؟ان طریقوں کا اصل فائدہ یہ ہے کہ جب آپ کو کیریئر کے بارے میں فیصلہ کرنے میں دشواری کا سامنا ہو، تو ان کی مدد سے بہت سے راستوں میں سے چند ایسے راستوں کو چننے میں آسانی ہو جاتی ہے، جو آپ کی صلاحیتوں اور دلچسپیوں سے قریب ترین ہوتے ہیں۔پھر آپ یہ معلوم کر سکتے ہیں کہ آپ کی فیلڈ میں کون سے جابز دستیاب ہیں اور ان کو حاصل کرنے کے لیے آپ کو کیا طریقہ کار اختیار کرنا ہو گا۔

اب آتے ہیں ہم کیریئر پلاننگ کے طریقوں کی طرف! لیکن یہاں یہ سمجھ لیں کہ کچھ طریقے ایسے ہیں جن کے لیے ہمیں کوئی رقم خرچ نہیں کرنا ہو گی، البتہ بعض ایسے ہوں گے جن کے لیے ہمیں تھوڑی بہت رقم خرچ کرنا ہوگی۔کوئی طریقہ آپ بغیر کسی کی مدد کے استعمال کر سکتے ہیں اور کسی طریقے پر عمل کے لیے آپ کو کسی ماہر سے مشورہ کرنا ہو گا۔تو جانتے ہیں کیرئیر پلاننگ کے ان طریقوں کے بارے میں!

1: SWOT

SWOTاپنی خوبیوں ،خامیوں ، مواقع اور خطرات کے بارے میں جاننے کی ایک تکنیک ہے۔ سواٹ  آپ کو یہ جاننے میں مدد دیتا ہے کہ کون سے جابز آپ کی مہارتوں سے مطابقت رکھتے ہیں۔ اس کے علاوہ  کون سے داخلی اور بیرونی عوامل آپ کے کیریئر کے انتخاب کو متاثر کرسکتے ہیں،اس کا سادہ طریقہ یہ ہے کہ آپ ایک کاغذ پر چار کالم بنائیں ، ہر کالم میں آگے آنے والے سوالوں میں سے ایک سوال لکھیں ،اپنے آپ سے یہ سوال پوچھیں، اور سوالوں کے نیچے ان کے جواب لکھیں۔وہ سوال یہ ہیں:

1۔میرے پاس کون سی مہارتیں ہیں؟ میری دلچسپیاں کیا ہیں؟  اور میں کس طرح کے ماحول میں آگے بڑھ سکتا  ہوں؟

2۔ کون سے مضامین میں میری کارکردگی اچھی نہیں رہتی؟ میں کون سے کام کرنے سے گھبراتا ہوں؟ کس طرح کے  کاموں میں مجھے  لطف نہیں آتا؟

3۔ کس طرح کے ماحول میں محنت کر کے مجھے خوشی ہوتی ہے؟ کس طرح میرے اندر کام کرنے کا جذبہ پیدا ہوتا ہے؟

4۔ کیا میں کسی دفتر یاادارے کے لیے پریشانی کا باعث بن جاتا ہوں؟ کوئی کمپنی کیوں مجھے ملازمت پر نہیں رکھنا چاہے گی؟

پہلا سوال آپ کو اپنی خوبیوں، دوسرا خامیوں، تیسرا مواقع اور چوتھا خطرات کو جاننے میں مدد دے گا۔البتہ اگر آپ زیادہ  گہرائی میں جا کر SWOT تجزیہ کرنا چاہتے ہیں تو آپ کو کسی ماہر کی مدد کی ضرورت ہو گی۔

2:کیریئر کے ٹیسٹ

بہت سے ادارےایسے ٹیسٹ پیش کرتے ہیں جن سے آپ کو اندازہ ہو سکے  کہ کون سے جابز آپ کی شخصیت اور قابلیت کے ساتھ مطابقت رکھتے ہیں۔ ان میں سے کچھ کی فیس چارج کی جاتی ہے  اور کچھ مفت ہیں۔ طلباء کے لیے بہت سے ٹیسٹ ہائی سکول کی سطح پر دستیاب ہوتے ہیں ،تاکہ وہ کالج میں جانے سے پہلے ہی کیریئر کے راستوں کا فیصلہ کرسکیں۔ کیریئر کے بہت سے فری  ٹیسٹ آن لائن بھی مل سکتے ہیں ، لیکن کسی ماہر  کوچ کی مدد حاصل کرنا  زیادہ بہتر ثابت ہوسکتا ہے۔

3: اپنی تشخیص خود کریں

بعض اوقات آپ اپنے بارے میں خود بہتر طریقے سے جان سکتے  ہیں۔ اس کے لیے کئی طریقے ہو سکتے ہیں، مثلاً اپنے تخیل کو کام میں لاتے ہوئے ایک کاغذ پر اپنے پسندیدہ جاب کا نقشہ کھینچیں،خود تشخیصی ورک شیٹس سے مدد لیں یا کسی دوست یا رشتہ دار کے ساتھ کام پر ایک دن گزاریں اور دیکھیں آپ کو کس طرح کام کرنا اچھا لگا یا نہیں لگا، اور کیا آپ مستقبل میں اس قسم کی جاب کرنا پسند کریں گے؟

4: تحقیق کریں

مختلف جابز اور کیریئر زکے بارے میں پڑھیں اور دیکھیں کہ کون سے کیرئیر میں آپ کو زیادہ دلچسپی محسوس ہوتی ہے۔ کیریئر اور ملازمت کے مواقع پر تحقیق کے بہت سارے طریقے ہیں ، لیکن سب سے آسان طریقہ  کیریئر گائیڈز کا مطالعہ کرنا ہے۔ اس سے آپ کو کیریئر کے بہت سے راستوں کو تلاش کرنے اور ان کے بارے میں منصوبہ بندی کرنے میں مدد مل سکتی ہے۔

5: اپنے آس پاس موجود  وسائل پر نظر دوڑائیں

بہت سے ادارے اور تنظیمیں  ورکشاپس، سیمینارز، ویب سائٹس اور پرنٹڈ میٹیرئل کے ذریعےکیریئر پلاننگ پر رہنمائی مہیا  کرتی ہیں۔ ہو سکتا ہے کچھ مقامات پر لائبریریاں،کتابیں ، رسائل اور کمپیوٹربھی دستیاب ہوں۔ ان وسائل سے فائدہ اٹھائیں۔

6: شخصیت کے ٹیسٹ

شخصیت کے ٹیسٹ آپ کی شخصیت کے بنیادی پہلوؤں کی نشاندہی کرتے ہیں۔ ان سے آپ کو یہ جاننے میں مدد مل سکتی ہے کہ کون سے جابز آپ کی شخصیت کے لیے موزوں ہو سکتے ہیں اور کون سے نہیں۔

7: کیریئر پلاننگ کا عمل

اگر آپ  طے کرنا چاہتے ہیں کہ آپ کو کون سا کیریئر لینا چاہئے اور وہاں تک پہنچنے کے لیے کون سے اقدامات اٹھانے ہیں  تو قدم بہ قدم کیریئر کی منصوبہ بندی کا طریق کار اختیار  کریں۔ اس کے ذریعے  آپ کو اس بات کا تعین کرنے میں مدد ملے گی  کہ آپ کو اپنے منتخب کردہ کیریئر کے میدان میں ملازمت تلاش کرنے کے لئے کس تعلیم، تجربے  اور کون سے اقدامات کی ضرورت ہے۔